کراچی میں دہشتگردی کی بڑی کارروائی کا خدشہ ، ہائی الرٹ جاری کر دیا گیادہشتگردی کے خدشے کے پیش نظر شہر بھر میں اسنیپ چیکنگ میں بھی اضافہ کردیا گیا ہے

کراچی شہر قائد ایک مرتبہ پھر سے دہشتگردی کے نشانے پر ہے۔ شہر قائد میں دہشتگردی کے بڑے خدشے کے پیش نظر سکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب شہر بھر میں اچانک اسنیپ چیکنگ بڑھادی گئی، پولیس کی بھاری نفری بھی جگہ جگہ تعینات کردی گئی ۔ میڈیا ذرائع کے مطابق پولیس کو انٹیلی جنس اطلاع ملی ہے کہ شہر میں سفید رنگ کی ایک مشتبہ گاڑی داخل ہوچکی ہے جس کے ذریعے دہشت گردی کی کوئی بڑی واردات کی جاسکتی ہے لہٰذا اس سفید کرولا کو جلد از جلد تلاش کیا جائے۔
میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ انٹیلی جنس اطلاع کے تناظر میں پیر اور منگل کی درمیانی شب ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن کی جانب سے فوری احکامات دیے گئے کہ تمام ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز سڑکوں پر موجود رہیں جبکہ اسنیپ چیکنگ فوری طور پر بڑھادی جائے۔احکامات ملتے ہی کراچی پولیس الرٹ ہوگئی اور شہر بھر میں باقاعدہ طور پر ناکے لگادیے گئے ، گاڑیوں کی اسنیپ چیکنگ بڑھادی گئی جب کہ خصوصی طور پر سفید رنگ کی گاڑیوں اور کرولا ماڈل کی گاڑیوں کو چیک کیا گیاڈیفنس ، کلفٹن ، گذری ، درخشاں ، میٹرو پول ، صدر ، نمائش ، گرومندر ، نیو پریڈی اسٹریٹ ، لیاقت آباد دس نمبر ، لیاقت آباد ڈاکخانہ ، راشد منہاس روڈ ، گلشن اقبال ، گلستان جوہر ، ٹاور اور دیگر شاہراہوں پر پولیس کی بھاری نفری رات بھر تعینات رہی جب کہ اس دوران تمام ایس ایچ اوز اور ایس ڈی پی اوز بھی سڑکوں پر موجود رہے تاہم کوئی مشکوک گاڑی نہیں مل سکی۔ یاد رہے کہ کراچی میں پہلے ہی ایک سفید کرولا گینگ انتہائی سرگرم ہے جبکہ چند روز قبل ہی انٹیلی جنس اداروں کی جانب سے اطلاع فراہم کی گئی تھی کہ دہشت گرد شہر میں کسی بڑی دہشت گردی کی منصوبہ بندی کررہے ہیں اور اس سلسلے میں کسی سرکاری دفتر کو بھی نشانہ بنایا جاسکتا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *