وہ بھارتی اداکارہ جس نے سرکاری ہسپتال میں کورونا کا علاج کروانے سے منع کردیا، پھر کیا ہوا؟

ممبئی (ایچ ایل این نیوز ایچ ڈی آن لائن) بھارتی اداکارہ بنیتا سندھو نے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد سرکاری ہسپتال میں علاج کروانے سے انکار کردیا جس کے بعد خوب ہنگامہ ہوا لیکن حکام کی کوئی کوشش کارگر ثابت نہ ہوئی اور آخر کار اداکارہ کو انہیں نجی ہسپتال منتقل کرنا پڑا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بنیتا سندھو نے 20 دسمبر کو فلم ’کویتا اینڈ ٹیریسا‘ کی شوٹنگ کیلئے کولکتہ کا رخ کیا تھا۔ انہوں نے جس جہاز میں سفر کیا اس میں ایک ایسا نوجوان موجود تھا جس میں برطانیہ میں دریافت ہونے والا نیا کورونا وائرس موجود تھا۔ اداکارہ بنیتا سندھو بھی کورونا میں مبتلا ہوگئیں جس کے بعد انہیں کولکتہ کے سرکاری ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم انہوں نے ایمبولینس سے باہر آنے سے انکار دیا
اداکارہ نے موقف اپنایا کہ وہ سرکاری ہسپتال میں علاج نہیں کرائیں گی کیونکہ یہاں سہولیات کا فقدان ہے جس کے بعد حکام کی ان سے کافی دیر تک گفت و شنید ہوتی رہی۔ ایک موقع پر اداکارہ نے ایمبولینس سے باہر آنے کا ذہن بنایا لیکن وہ ایس او پیز فالو کرنے کو تیار نہیں تھیں جس کی وجہ سے انہیں باہر آنے سے روک دیا گیا۔
ہسپتال کے باہر ہنگامہ آرائی کے بعد پولیس کو طلب کیا گیا جس نے ایمبولینس کو گھیرے میں لے لیا تاکہ اداکارہ اس سے باہر نہ نکل سکیں۔ کافی تگ و دو کے بعد اداکارہ بنیتا سندھو کو نجی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *