مریم نواز اس وقت کن کن بڑوں سے رابطوں میں ہیں؟

اسلام آباد نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے کہا کہ مریم نواز کے خیال میں میجر جنرل کوئی اہم عہدہ نہیں ہے اسی لیے غالباً وہ ڈی جی آئی ایس پی آر کو ہدف تنقید بنا رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ اُن کا لیول نہیں ہے ، اُس سے اوپر ہے ، ہو سکتا ہے کہ ان کی امریکی کانگریس سے بات ہوتی ہو ، ہو سکتا ہے کہ مریم نواز کی جوبائیڈن سے بات ہوتی ہو۔
اگر ان کے نزدیک ایک ڈی جی آئی ایس پی آر، جو پاک فوج کا ترجمان ہے ، اور جو کہہ چکے ہیں کہ فوج کو سیاست میں نہ گھسیٹیں، میرے نزدیک اُن کی بات پر یقین کرنے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہے لیکن مریم نواز کہتی ہیں کہ یہ اُن کے بھی اوپر کے لیول کی بات ہے۔ان کے اپنے والد اشتہاری ہیں۔ پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر صحافی و تجزیہ کار طاہر ملک نے کہا کہ اگر ان کو اقتدار میں آنا ہے تو پڑھا لکھا حل یہ ہے کہ عوام کی خدمت کریں ، عوام کے مسائل کا حل نکالیں ، سیاست کریں۔عارف حمید بھٹی نے کہا کہ مریم نواز کا کہنا ہے کہ میری صحت خراب ہے اور اس کا علاج پاکستان میں نہیں ہے لیکن میں پھر بھی باہر نہیں جاؤں گی۔ انہوں نے کہا کہ میں مریم نواز کی صحت کے لیے دو نفل حاجت اور دو نفل تہجد کے مان لیتا ہوں ، تاکہ اللہ ان کو صحت دے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *