لڑکے کو بے دردی سے قتل کرنے والے کلاس فیلو کا ویڈیو بیان سامنے آ گیاارباز کو چھت پر لے جا کر پہلے پتھر سے زخمی کیا پھر دوسری منزل سے نیچے پھینک دیا،دوست کو زندہ حالت میں چھت سے پھینکا۔واقعے کے بعد کپڑوں اور زمین پر لگے خون کے دھبے دھوئے۔ کم عمر ملزم ارحم کا بیان

کراچی کے علاقہ منگھو پیر میں 13 سالہ لڑکےکو بےدردی سے قتل کر دیا گیا تھا۔ جمعے کی شام منگو پیر سے لا پتہ ہونے والے 12 سالہ بچے کی لاش اورنگی ٹاون الطاف نگر کے بلاک A کے قریب پلاٹ سے برآمد ہوئی تھی۔پولیس نے بتایا کہ 13 سالہ ارباز کو اس کے کلاس فیلو ارحم نے قتل کیا ، جسے حراست میں لے لیا گیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ قاتل ارحم نے اپنے ساتھی کو قتل کرنے کا اعتراف بھی کر لیا ہے۔پولیس کے مطابق ارحم نے ارباز کو سر پر بھاری چیز مار کر قتل کیا تھا۔ منگھوپیر میں دوست کو قتل کرنیوالے 13 سالہ ملزم کا ویڈیو بیان سامنے آگیا۔کم عمر ملزم ارحم کا کہنا ہے کہ ارباز کو چھت پر لے جا کر پہلے پتھر سے زخمی کیا پھر دوسری منزل سے نیچے پھینک دیا۔
واقعے کے بعد کپڑوں اور زمین پر لگے خون کے دھبے دھوئے۔ارحم نے بیان میں مزید کہا کہ ارباز کو پیپر لیک ہونے کا پتہ چگ گیا تھا اس لیے مارا۔ملزم نے بیان دیا کہ جب ارباز کو چھت سے نیچے پھینکا تو وہ زندہ تھا۔پولیس کا کہنا تھا کہ ارحم کے ساتھ قتل میں ملوث ایک اور ملزم ارسلان کو بھی حراست میں لے لیا گیا ۔ ارحم نے ارسلان کی ہی مدد سے ارباز کی لاش کو پلاٹ میں لے جا کر پھینکا تھا۔ دونوں ملزمان ارحم اور ارسلان کو ریمانڈ کے لیے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ملزم کے گھر کی تلاشی کے دوران ارباز کو قتل کرنے کے لیے استعمال کیا جانے والا پتھر بھی برآمد ہوا۔ ارحم کے گھر سے برآمد ہونے والی چیزوں میں ارحم کے خون آلود کپڑے اور ارباز کو موبائل فون بھی تھا۔ پولیس نے کہا کہ ملزم نے اپنے ابتدائی بیان میں بتایا کہ ٹیچر نے اسے پیپر لیک کرکے دیا ، جس کا ارباز کو پتہ چل گیا تھا، اور یہی بات قتل کی وجہ بنی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *