رشتے سے انکار کرنے پر ملزمان کی لڑکی کو اغوا کر کے چار ماہ تک زیادتی رائے ونڈ روڈ کی رہائشی حنا شاہد انصاف کے لیے سیشن عدالت پہنچ گئی

لاہور رشتے سے انکار کرنے پر رائے ونڈ کی رہائشی لڑکی کو ملزمان نے اغوا کر کے چار ماہ تک اُسے جنسی زیادتی کا نشان بناتے رہے۔ لاہور کے علاقہ رائے ونڈ روڈ کی رہائشی حنا بی بی نے انصاف کے لیے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا دیا۔ تفصیلات کے مطابق حنا بی بی اپنے والد کے ہمراہ انصاف کے حصول کے لیے سیشن عدالت کے سامنے پیش ہوئی۔متاثرہ خاتون نے ملزمان کی درخواست ضمانت خارج کرنے اور انہیں قرار واقعی سزا دینے کی استدعا کی۔ ایڈیشنل سیشن جج ذوالفقار علی نے ملزم عباس کی قبل از گرفتاری ضمانت کی درخواست خارج کر دی۔ حنا بی بی کا کہنا تھا کہ ستمبر 2020ء میں ملزم عباس، شعیب، عامر اور شاہ میر نے مجھے اغوا کیا۔ لڑکی کے والد نے عدالت کے سامنے بیان دیا کہ ملزم عباس ہمیں رشتے کے معاملے پر دو سال سے تنگ کر رہا تھا۔عباس مسلسل زبردستی حنا کا رشتہ مانگ رہا تھا۔ لیکن ہم نے انکار کر دیا۔ ہمارے رشتہ دینے سے انکار پر ملزمان نے میری بیٹی کو اغوا کر لیا۔ حنا بی بی نے عدالت میں بیان دیا کہ میں گھر سے بازار گئی ، جہاں راستے میں ملزم عباس نے دیگر ملزمان کے ساتھ مل کرگن پوائنٹ پر مجھے اغوا کرلیا۔ حنا بی بی نے بتایا کہ اغوا کرنے کے بعد ملزمان نے مجھے چار ماہ تک ایک نامعلوم جگہ پر قید رکھا اور مجھے زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔
ملزمان کے خلاف تھانہ رائے ونڈ سٹی میں مقدمہ درج ہوا۔ عدالت کے سامنے متاثرہ خاتون کے والد نے عدالت سے انصاف کا مطالبہ کیا اور کہا کہ ہمارے ساتھ ظلم ہوا ہے، عدالت سے انصاف کی اُمید ہے۔ متاثرہ لڑکی کے والد نے مزید کہا کہ ہمیں ملزمان کی جانب سے مقدمہ واپس لینے پر بھی مجبور کیا جا رہا ہے لیکن ہم عدالت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ملزمان کو سزا دی جائے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *