بیٹری بنانے والی فیکٹری میں آگ بھڑک اٹھی،ایک شخص ہلاک،بیس زخمی آگ کے شعلے اور دھوئیں کے بادلوں نے دور تک لوگوں کو خوفزدہ کر دیا

بیجنگ فیکٹری میں دھماکے کی صورت میں آگ بھڑک اٹھی۔ اس دھماکے اور آگ کی وجہ سے اب تک کی اطلاعات کے مطابق ایک شخص جاں بحق ہوا جبکہ بیس افراد جھلس کر زخمی ہو گئے ہیں۔خوفناک اور ڈراﺅنی ویڈیوز میں دھوئیں کے بادل آسمان کی طرف بلند ہوتے ہوئے ایک مشروم کی صورت اختیار کر رہے تھے جس سے اندازہ ہوتا تھا کہ بہت بڑا بلاسٹ ہوا ہے اور دور دور سے لوگوں کی توجہ اس مشروم نما دھوئیں کے بادلوںکی طرف متوجہ ہو گئی۔حکومتی ذرائع کے مطابق زخمیوںمیں سے چھے کی حالت بہت تشویش ناک ہے جبکہ باقی ماندہ 14افراد کو چھوٹی موٹی چوٹیں آئی ہیں۔سرکاری ذرائع کے مطابق دھماکا شام چھے بجے کے بعد ہوااور ابھی ابتدائی طور پر اس دھماکے کی وجوہات کا پتا نہیں چل سکا کہ کس وجہ سے دھماکا ہوااور اس کے نتیجے میں ا س قدر بھیانک آگ بھڑک اٹھی ہے۔آگ اس قدر شدید تھی کہ اس پر قابو پانے کے لیے 36فائر انجنز اور288فائر فائٹرز کو موقعہ پر بھیجا گیا تھا۔جبکہ دھماکے کے بعد آگ پر مکمل قابو پانے میں دو گھنٹے لگ گئے تھے جس وجہ سے فیکٹری کی پرانی ورکشاپ مکمل طور پر تباہ ہو گئی تھی جہاں بنیادی طور پر دھماکے کی صورت میں آگ بھڑک اٹھی تھی۔فیکٹری ترجمان کا کہنا تھا کہ اس دھماکے کی وجہ سے فیکٹری پروڈکشن زیادہ متاثر نہیں ہو گی ۔جبکہ اس افسوس ناک واقعہ پر فیکٹری مالکان نے سکیورٹی کو مضبوط کرنے اور آئندہ ایسے واقعات پیش نہ آنے کے لیے اقدامات اٹھانے کا اعلان کیا ہے۔جبکہ ابتدائی طور پر ایک کمیٹی بھی بنا دی گئی ہے جو اس بات کی نشاندہی کرے گی کہ فیکٹری میں دھماکہ کس وجہ سے ہوا اور اس کے نتیجے میں ایسے اقدامات کرنے کے لیے لائحہ عمل اختیار کیا جائے گا کہ مستقبل میں ایسے واقعات پیش نہ ہوں اور قیمتی جانیں بچ جائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *