بلوچستان غیر محفوظ ہے، دہشتگردی ختم کرنے کے دعویدار کہاں ہیں؟بلوچستان کے علاقے مچھ میں بربریت کی عجیب و غریب داستان رقم کی گئی، بنوں جلسے میں کوئٹہ میں ظلم و بربریت اور پر حکومت کی غیر سنجیدگی پر لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔ مولانا فضل الرحمن کی میڈیا سے گفتگو

اسلام آبادجمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کا کہنا ہے کہ بلوچستان غیر محفوظ ہے، دہشتگردی ختم کرنے کے دعویدار کہاں ہیں۔انہوں نے بنوں میں پی ڈی ایم کے جلسے میں شرکت کے لیے روانگی سے قبل میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس جعلی اسمبلی کو وقت پورا نہیں کرنے دیں گے۔عوامی مینڈیٹ کو پس پشت ڈالر کر موجودہ اسملیاں وجود میں لائی گئیں۔
وزیراعظم نے پسپائی کا راشتہ اختیار کیا ہے۔انہوں نے کہا ملتان اور لاہور میں پی ڈی ایم کے جلسوں اور ریلیوں میں رکاوٹیں کھڑی کی گئیں۔مقامی میڈیا کو زبردستی غلط رپورٹنگ کرائی گئی جسے انٹرنیشنل میڈیا نے مسترد کر دیا۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے علاقے مچھ میں بربریت کی عجیب و غریب داستان رقم کی گئی،دہشت گردوی کو ختم کرنے والے دعویدار کہاں ہیں۔
قبائلی علاقے اور بلوچستان غیر محفوظ ہیں۔آج بنوں جلسے میں کوئٹہ میں ظلم و بربریت اور پر حکومت کی غیر سنجیدگی پر لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔دوسری جانب ) وزیراعظم عمران خان نے سانحہ مچھ سے متعلق واضح کیا ہے کہ سانحہ مچھ میں ملوث مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے، ظالم جلد اپنے انجام کو پہنچیں گے۔وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا، وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کی جانب سے کابینہ اجلاس کے دوران ہزارہ برادری سے مذاکرات پر بریفنگ دی گئی۔نجی ٹی وی کے مطابق شیخ رشید احمد نے کہا کہ مظاہرین کے 8 میں سے 7 مطالبات تسلیم کر رہے ہیں، بلوچستان اسمبلی کے استعفوں کا ہم سے تعلق نہیں۔اجلاس کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ سانحہ مچھ کے لواحقین کو تنہا نہیں چھوڑیں گے، سانحہ مچھ میں ملوث مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے، ظالم جلد اپنے انجام کو پہنچیں گے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *