بدقسمتی سے ہم ایسے ملک میں رہتے ہیں جہاں شہداء اور لاش کو بھی احتجاج کرناپڑتاہے

کوئٹہ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے مطالبہ کیاہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر اس کی اصل روح کے مطابق عملدرآمدکیاجائے ،ملک میں گیس،بجلی ،کھانے پینے کی اشیاء مہنگی لیکن عوام کاخون سستا ہے ،ریاست اپنا آئینی وقانونی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے عوام کو جان ومال کے تحفظ کی فراہمی یقینی بنائیں ،بدقسمتی سے ہم ایسے ملک میں رہتے ہیں جہاں شہداء اور لاش کو بھی احتجاج کرناپڑتاہےپیپلزپارٹی ہزارہ برادری کے غم میں برابر کی شریک اور مکمل یکجہتی کااظہار کرتے ہوئے لواحقین کی ہرمشکل گھڑی میں ساتھ کھڑی ہوگی ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے جمعرات کو مچھ میں ہزارہ برادری کے جاری دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنماء سید یوسف رضا گیلانی ،وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ ،حاجی میر علی مدد جتک ، سیداقبال شاہ ودیگر بھی موجود تھے ۔پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ پاکستان ایک ایسی دھرتی ہے جہاں شہیدوں اور لاشوں کو بھی انصاف کیلئے احتجاج کرناپڑتاہے ،سب کچھ گیس،بجلی ،کھانے پینے کی اشیاء مہنگی لیکن عوام کا خون سستا ہے ،سیاسی کارکن ،ہزارہ برادری سمیت ہر کسی کو محسوس ہورہاہے کہ ان کا خون سستاہوگیاہے 1999ء سے لیکر آج تک 2ہزار ہزارہ شہید ہوچکے ہیں مگر آج تک کسی ایک شہید کوانصاف نہیں ملاہے ہمارے بزرگوں ،ہمارے بڑوں کے حکومت میں بھی احتجاج ہوا تھا پاکستان پیپلزپارٹی ہزارہ برادری کے اس غم میں برابر کے شریک ہیں میں بھی شہیدوں کے خاندان سے تعلق رکھتا ہوں اور آج تک اپنے شہدوں کیلئے انصاف نہیں پا سکیں ،آپ سے وعدہ ہے کہ دن رات جاری جدوجہد کے ذریعے آپ کے شہدوں کو انصاف دلائینگے ،انہوں نے کہاکہ بدقسمتی سے ہمیں لاشوں کے ساتھ بیٹھ کراحتجاج کرناپڑتاہے لیکن کسی شہید کوانصاف نہیں دلاسکے ،سب سے زیادہ اس ملک میں محب وطن لوگ آج یہاں بیٹھے ہیں اگر ان محب وطنوں اور مظلوموں کوانصاف نہیں دلاسکے تو دنیا کو کیا جواب دیںگے کہ ہم اپنے مزدوروں کو تحفظ نہیں دلاسکے اور نہ ہی عوام کو جینے کا حق دلاسکے ہیں ،آج لوگوں کے آئی ڈی چیک کرکے قتل کیاجاتاہے یہ کہاں کاانصاف ہے ،عوام کو زندگی کا تحفظ جب میسر نہ ہو ریاست ریاست نہیں کہلاسکتی ،جب تحفظ ہو تو ہم معیشت اور ترقی کی بات کرسکیںگے ،مسائل بہت ہیں لیکن آج ہم صرف امن ،جینے کا حق کامطالبہ کررہے ہیں ،فرزند کربلا جانتے ہیں کہ شہادتیں کیسے دی جاتی ہیں اور کبھی کسی ظالم کے سامنے اپنا سر نہیں جھکائینگے مگر آج اپنے شہداء کیلئے انصاف مانگنے کیلئے احتجاج پر بیٹھے ہیں پورا پاکستان مظلوم لوگوں کے ساتھ ہے ،پیپلزپارٹی ریاست سے مطالبہ کرتی ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد کرینگے ملک کو دہشت گردی سے پاک کرینگے ،آرمی پبلک سکولز کے بچوں سے وعدہ کیاگیاتھا مگر آج دہشتگرد نہ صرف حملہ کرتے ہیں تونیشنل ایکشن پلان پر عمل نہ ہونے کے برابر ہے سازشی ممالک کی پشت پناہی حاصل ہوسکتی ہے لیکن ان کی سازشوں کی کامیابی سے ہماری ریاستی ناکامی ہوگی اگر شہداء کے خاندانوں کوانصاف نہیں ملے گا اور انہیں یقین نہ ہو کہ وہ محفوظ ہیں بلکہ اس سے عوام میں خوف پھیلے گا بلکہ ملک اور وفاق کو خطرہ ہوگا،پیپلزپارٹی مزدوروں کیلئے انصاف کی فراہمی کامطالبہ کرتے ہوئے مکمل یکجہتی کااظہار کرتی ہیں اور تمام جائز مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے وعدہ کرتے ہیں کہ ہزارہ برادری کے ساتھ جاری ناانصافی ،ظلم کے خلاف پیپلزپارٹی دکھ اور مشکل وقت میں ساتھ ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *