”اللہ اس دوستی اور تعلق کو حاسدوں کی بُری نظر سے ہمیشہ محفوظ رکھے، یہ قربت اور محبت ہمیشہ قائم رہے، خدا کرے اس تاریخی موڑ سے اُمت کی پرانی شان و عظمت بحال ہو جائے“ماضی کے مخالف سعودی اور قطری حکمرانوں کے دوبارہ مل بیٹھنے پر اسلامی دُنیا کی جانب سے نیک جذبات کا اظہار کیا جا رہا ہے، سوشل میڈیا صارفین کی آنکھیں محمد بن سلمان اور قطری فرمانروا شیخ تمیم بن حمدکی تصاویر کو دیکھ کر خوشی سے چھلک اُٹھیں

سال 2021ء کا آغاز اُمت مُسلمہ کے لیے بے پناہ خوشی کا باعث ثابت ہو رہا ہے۔ نئے سال کے پہلے ہفتے میں ہی دُنیائے اسلام کے دو اہم ترین ممالک اپنی کئی دہائیوں پرانی دشمنی اور ناراضگی ختم کر کے پھر سے قریب آ گئے ہیں۔ اگرچہ دونوں ممالک میں دُوریاں اور نفرتیں پیدا کرنے والوں کے سینوں میں اس وقت حسد اور ناکامی کا الاؤ بھڑک رہا ہے جن کی کئی برسوں کی سازشی منصوبہ بندی اور ریشہ دوانیاں اللہ کی مرضی سے اپنی موت آپ مر گئی ہیں۔ماضی کے بھرپور مخالف سعودی اور قطری حکمرانوں کے دوبارہ مل بیٹھنے پر اسلامی دُنیا کی جانب سے نیک جذبات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ سوشل میڈیا صارفین کی آنکھیں محمد بن سلمان اور قطری فرمانروا شیخ تمیم بن حمدکی تصاویر کو دیکھ کر خوشی سے چھلک اُٹھیں۔ٹویٹر اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور قطری فرمانروا شیخ تمیم بن حمد الثانی کی ملاقات اور العلا کے پہاڑی مقام کی سیر کے دوران ایک دوسرے کے لیے گرم جوشی اور دوستانہ جذبات کو صارفین نے اللہ کی مہربانی قرار دیا ہے۔ایک قطری محمد صالح کا کہنا تھا کہ نئے سال کا اس سے خوبصورت تحفہ اور کیا ہو سکتا ہے، مسلم اُمہ کا نئے سال کا جشن تو صحیح معنوں میں اب شروع ہوا ہے۔ اللہ اس دوستی اور تعلق کو حاسدوں کی بُری نظر سے ہمیشہ محفوظ رکھے، یہ قربت اور محبت ہمیشہ قائم و دائم رہے۔ اُمید ہے کہ اب خلیجی خطے میں دیرپا امن قائم ہو گا۔ اور اسلا م مخالف قوتوں کی ریشہ دوانیاں ختم ہو جائیں گی۔
جبکہ ایک سعودی باشندے جابر الحمادی کا کہنا تھا کہ اُمید ہے کہ اسلام دشمنوں کے کلیجے پر اس وقت سانپ لوٹ رہے ہوں گے۔ دونوں ممالک کے درمیان ماضی کی کشیدگی کا یکایک دوستی اور احترام کے جذبات میں بدل جانا صرف اللہ کی مرضی سے ہی ممکن ہو پایا ہے، ورنہ کچھ روز پہلے تک دونوں ممالک کی مصالحت ایک خواب ہی معلوم ہو رہی تھی۔ جبکہ ایک اماراتی حمدان العینی نے اپنے بھرپور جوش و جذبے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ”اُمت مسلمہ کو یہ سعد گھڑی مبارک ہو۔اُمید ہے کہ باقی اسلامی ممالک بھی امن، سلامتی اور اسلامی تعلیمات کی راہ پر چلتے ہوئے جلد از جلد ایک دوسرے کو گلے لگا لیں گے۔ محمد بن سلمان زندہ باد، شیخ تمیم بن حمد الثانی زندہ باد۔ خدا کرے اب سے اُمت اسلامیہ کا وہی عروج شروع ہو، جس نے اسلام کو دُنیا بھر کے غیر مسلموں کی نظر میں ایک قابل رشک مذہب اور ایک بہترین ثقافت کا ترجمان بنا کر پیش کیا تھا۔جہاں سے سائنس اور فلسفہ کا ایسا دور پروان چڑھا جس نے یورپ پر چھائے جہالت اور گمراہی کے اندھیروں کو بھی مٹانے میں رہنما کردار ادا کیا ہے۔“واضح رہے کہ سعودیہ نے العْلا شہر میں خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) کے اکتالیسویں سربراہ اجلاس کے انعقاد سے ایک روز قبل قطر سے دوبارہ زمینی اور فضائی روابط استوار کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔جس کے بعد امیر قطر شیخ تمیم بن حمد نے خود جی سی سی کے سربراہ اجلاس میں شرکت کی ہے۔ان کا استقبال سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کیا اور بعد میں دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال بھی کیا گیا۔قطر اور دوسرے خلیجی ممالک کے درمیان تعلقات کی بحالی پر سعودی اور قطری شہریوں نے بے پناہ خوشی کا اظہار کیا ہے اوراس حوالے سے نیک جذبات پر مبنی ویڈیوز اور تصویر بھی شیئر کی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *